Tags » National

Devon National 3rd March

First Race onto the Blog is the Devon National and we start with a quick rundown of the runners.

Merlins Wish has all his favoured conditions, long distance, bottomless ground, but he will need a career best and I just can’t rate him as high as 125. 498 more words

Exeter

اپنے مطالبات کو پاکستان کے سامنے رکھیں اوےسی: شیوسینا

ممبئی: ایم آئی ایم کے لیڈر اسدددین اووےسی پر نشانہ لگاتے ہوئے شیوسینا نے کہا ہے اقلیتوں کے رہنما اووےسی کو اگر ذات کی بنیاد پر ریزرویشن چاہئے تو انہیں پاکستان چلے جانا چاہئے اور وہاں اپنے مطالبات کو رکھنا چاہئے. آپ کو بتا دیں کہ اووےسی نے مہاراشٹر کے مسلمانوں کو اقلیت قرار دیتے ہوئے ریزرویشن کی مانگ کی تھی.

شیوسینا نے اووےسی کی تقریر کو ‘نفرت’ قرار دیتے ہوئے کہا کہ دیویندر پھڑنویس حکومت کو اووےسی کے خلاف معاملہ درج کرانا چاہئے اور قانونی کارروائی شروع کر دینی چاہیے.
پڑھیں – مرتے دم تک کرتے رہیں گے بی جے پی-آر ایس ایس کی مخالفت: اووےسی
شیوسینا نے اپنے ترجمان ‘سامنا’ میں شائع ایک مضمون میں کہا اووےسی کا مطالبہ ہے کہ مہاراشٹر میں مسلمانوں کو مراٹھوں کی طرح ریزرویشن ملنا چاہئے. اس طرح کے اصرار ہندوستان سے پاکستان کی علیحدگی کا سبب بنتے ہیں. اووےسی کو پاکستان چلے جانا چاہئے، جہاں ان کے مطالبات کو مذہبی بنیاد پر مکمل کیا جا سکتا ہے.
ایم آئی ایم صدر اور حیدرآباد سے ایم پی اسدددین اووےسی نے ہفتہ کو ناگپور میں اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے مہاراشٹر میں ملازمت اور تعلیمی اداروں میں مسلمانوں کے لیے ریزرویشن کی مانگ کی تھی.

Urdu

مجھے گندی جنگ میں نہیں پڑنا، میرا دھیان کام پر ہے :کیجریوال

 نئی دہلی: عام آدمی پارٹی کے اندر مچے وبال کو دیکھتے ہوئے پارٹی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ٹوئٹر کے ذریعے اپنا درد بیان کیا ہے. کیجریوال نے ٹویٹ کر یہ لکھا ہے کہ ‘پارٹی کے اندر جو بھی چل رہا ہے اس سے میں بہت دلبرداشتہ ہوں اور مجھے گہری چوٹ لگی ہے. لیکن میں اس گندی جنگ میں نہیں پڑنا چاہتا، میں اپنا پورا خیال کام پر لگاوگا عوام اور عوام کے بھروسے کے نہیں ٹوٹنے دوں گا. ‘

آپ کو بتا دیں، عام آدمی پارٹی کا اندرونی خلفشار اب تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے. بیان بازی سے شروع ہوئی رسہ کشی اب الزام تراشیوں میں بدلتی جا رہی ہے. پارٹی لیڈر آشیش کھےتان نے ٹویٹر پر پرشانت بھوشن اور ان کے خاندان پر سنسنی خیز الزام لگائے ہیں. بتا دیں کہ یہ پہلی بار ہے جب پارٹی کی داخلی خلفشار میں الزام تراشیوں کا دور کھل کر سامنے آیا ہے.
کھےتان نے ٹوئٹر پر لکھا کہ جو لوگ پارٹی کو ایک آدمی کی پارٹی کی تھیوری بتا رہے ہیں، اصل میں وہ اسے ایک خاندان کی پارٹی بنانا چاہتے ہیں. کھےتان نے بھوشن خاندان کو نشانے پر لیتے ہوئے ٹویٹ کیا، ‘شانتی بھوشن، پیسیفک اور شالکنی یعنی والد، بیٹے اور بیٹی کی یہ تینوں پارٹی کے تمام ونگ پر اپنی گرفت بنان چاہتی ہے. وہ پارلیمانی کام کمیٹی (پی اے سی) سے لے کر پالیسی کمیٹی اور قومی مجلس عاملہ تک میں اپنی جگہ بنانا چاہتے ہیں ‘.
وہیں ان سب کے درمیان پارٹی کے ترجمان آشوتوش نے پرشانت بھوشن پر سوال اٹھائے ہیں. آشوتوش نے کہا ہے کہ پرشانت بھوشن پارٹی کے ایک معزز رکن ہیں اور انہیں عوامی طور پر اس طرح کے بیان نہیں دینے چاہئے تھے.
واضح رہے کہ چار مارچ یعنی کہ بدھ کو عام آدمی پارٹی کی قومی مجلس عاملہ کی میٹنگ ہونی ہے، جس یوگےدر یادو اور پرشانت بھوشن کی قسمت پر فیصلہ ہوگا.

Urdu

کس نے کہا، سنگھ 'غیر شادی کا اڈہ'، نہ دے فرمان

ایم آئی ایم کے لیڈر اکبرددین اووےسی نے ایک متنازعہ بیان میں آر ایس ایس کو ‘غیر شادی کا اڈہ’ قرار دیا ہے. انہوں نے کہا کہ جو لوگ زیادہ بچے پیدا کرنے کی وکالت کر رہے ہیں انہیں ایسا کہنے کا حق نہیں ہے کیونکہ وہ خود غیر شادی شدہ ہیں.

اووےسی نے فرقہ وارانہ سیاست سے لڑنے کے لئے تمام مسلمانوں سے متحد ہونے کا بھی اعلان کیا. ہندوو¿ں سے چار چار بچے پیدا کرنے کی بات کہنے والے یونین اور بی جے پی سے وابستہ رہنماو¿ں کے نام لئے بغیر تلنگانہ اسمبلی میں ایم آئی ایم کے لیڈر اووےسی نے کہا کہ انہیں یہ بتانا چاہئے کہ کیا بچوں کو تعلیم اور روزگار دلانے کے لئے کافی وسائل ہے.

Urdu

صہولیت چاہئے تو پاکستان جائیں مسلمان: شیوسینا

ممبئی: شیوسینا نے یہاں منگل کو کہا کہ بھارت میں رہنے والے مسلمان اگر خصوصی سہولیات چاہتے ہیں تو انہیں پاکستان چلے جانا چاہئے. شیوسینا نے اپنے ترجمان ‘سامنا’ میں کہا، ‘اگر وہ (مسلمان) اس ملک سے کچھ چاہتے ہیں، تو پہلے بھارت کو اپنے وطن کو قبول کریں اور وندے ماترم بولیں.’ ‘سامنا’ میں یہ مضمون ایک مارچ کو آل انڈیا اتحادالمسلمین (اے آئی اےم آئی ایم) اہم اسدددین اووےسی کے ناگپور میں دیے گئے تقریر کے رد عمل میں آیا ہے جہاں انہوں نے مہاراشٹر میں مراٹھیوں کی طرح ہی مسلمانوں کو بھی ریزرویشن دینے کی مانگ کی تھی.
شیوسینا نے اووےسی کی بات پر غصہ ظاہر کرتے ہوئے اور اپنا رخ دہراتے ہوئے کہا کہ ریزرویشن کی پالیسی سماجی معیار پر مبنی ہونی چاہئے، نہ کہ مذہب کے طرز پر. شیوسینا نے کہا، ‘غریب مسلمانوں کو ریزرویشن دیا جانا چاہئے. اس لئے نہیں کہ وہ مسلمان ہیں، بلکہ اس لئے کہ وہ ہندوستان کے شہری ہیں. ‘ پارٹی نے تمام لوگوں سے، خاص طور ہندوو¿ں اور مسلمانوں سے یہ نظریہ کو اپنانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اس سے ہی ووٹ بینک اور ریزرویشن کی سیاسی ختم ہو سکتی ہے اور ملک کی ترقی میں مدد مل سکتی ہے.
شیوسینا نے کہا، ‘اووےسی کہہ رہے ہیں کہ چونکہ مراٹھی لوگوں کو ریزرویشن ملا ہے، تو مسلمانوں کو بھی ملنا چاہئے. یہ کٹر مسلمانوں کا وہی ہندو مخالف ضد رویہ ہے، جس کی وجہ سے بھارت کی تقسیم ہوا تھا اور انہوں نے پاکستان بنایا تھا. لیکن اب اور نہیں. ‘ مضمون میں کہا گیا کہ مسلمانوں کو یکساں سول کوڈ قبول کرنی ہوگی، خاندانی منصوبہ بندی اپنانا ہوگا اور جموں کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کی مانگ چھوڑنی ہوگی.
اووےسی کی تقریر کو ملک مخالف قرار دیتے ہوئے شیوسینا نے اس کی جانچ کرائے جانے کا مطالبہ کیا کہ کہیں انہوں نے مہاراشٹر میں فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا کرنے کے لئے تو اس طرح کا بیان نہیں دیا. پارٹی نے وزیر اعلی دیویندر پھڈویس سے اس پر مسئلہ پر کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا.

Urdu

5 Things To Know For Your New Day - Tuesday, March 3

NETANYAHU SPEECH

What will he say?: At times, Israeli leader Benjamin Netanyahu and U.S. President Barack Obama barely seem to tolerate each other. Today’s speech by the Israeli Prime Minister probably won’t help matters. 231 more words

National

مودی کو PM بنانے کے لئے BJP نے جم کر کیا خرچ

لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی نے تبلیغ وغیرہ میں 712 کروڑ روپے سے زیادہ خرچ کئے. پارٹی نے مودی کی طوفانی ریلیوں، چائے پر بات چیت اور 3 ڈی پروگراموں پر 460 کروڑ روپے سے زیادہ خرچ کر دیے، جبکہ کانگریس نے پورے انتخابی مہم پر 486.21 کروڑ خرچ کئے.

انتخابی مہم میں خرچ کے معاملے میں لوک سبھا انتخابات میں راشٹروادی کانگریس پارٹی تیسرے نمبر پر رہی، اس نے 64.48 کروڑ روپے خرچ کئے. ایسوسی ایشن آف ڈیموکریٹک رپھرمس (اے ڈی آر) کے مطابق، 2004 سے 2014 کے درمیان سیاسی جماعتوں کے چندے میں 418 فیصد کا اضافہ ہوا، جبکہ اخراجات میں 386 فیصد کی.
قومی پارٹی کے آمدنی-اخراجات کے مطالعہ کے بعد اےڈی آر نے بتایا کہ 2004 میں ہوئے لوک سبھا انتخابات میں قومی پارٹیوں نے 223.80 کروڑ روپے چٹا جٹایا تھا جبکہ 2009 میں انہوں نے 854.89 کروڑ روپے کئے. 2014 کے لوک سبھا انتخابات میں قومی پارٹیوں کو 1،158.59 کروڑ روپے کا چندہ ملا.
اےڈی ار نے جن جماعتوں کا مطالعہ کیا ہے، ان میں بی جے پی، کانگریس، بی ایس پی، این سی پی، سی پی آئی اور سی پی ایم شامل ہیں.

Urdu